Categories
کھیل

آنجہانی کرکٹر عبدالقادر گزشتہ روز جمعہ پڑھنے مسجد گئے تو ان کا جوتا چوری ہو گیا پھر انہوں نے کیا کام کیا؟ کامران اکمل نے ایسا انکشاف کر دیا کہ آپ بھی آنسو نہ روک پائیں گے

لاہور (ویب ڈیسک) سابق پاکستان لیجنڈری لیگ اسپینر عبدالقادر کے انتقال کے بعد ان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی کامران اکمل نے کہا ہے کہ عبدالقادر انتہائی نیک شخصیت تھے جو اپنے سے زیادہ دوسروں کے بارے میں سوچتے تھے، گزشتہ روز جمعہ پڑھنے گئے تو


ان کا جوتا چوری ہو گیا جس پر وہ ننگے پاﺅں ہی گھر آ گئے۔تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کامران اکمل نے کہا کہ عبدالقادر دنیائے کرکٹ کا بہت بڑا نام تھے جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ کل سے اب تک بڑی بڑی شخصیات نے افسوس اورتعزیت کا اظہار کیا ہے۔ ہر کسی نے اللہ کے پاس جانا ہے اور ہمیں اس کی تیاری کرنی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ عبدالقادر بہت نیک اور سچے انسان تھے جو اپنا نہیں بلکہ دوسروں کا سوچتے تھے۔ وہ گزشتہ روز جمعہ پڑھنے کیلئے مسجد گئے تو ان کا جوتا چوری ہو گیا جس پر انہوں نے کہا کہ کچھ نہیں ہوتا، سب کچھ یہیں رہ جانا ہے اور وہ ننگے پاﺅں ہی گھر واپس آ گئے۔ دنیائے کرکٹ کا بہت بڑا نام تھے جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ کل سے اب تک بڑی بڑی شخصیات نے افسوس اورتعزیت کا اظہار کیا ہے۔ ہر کسی نے اللہ کے پاس جانا ہے اور ہمیں اس کی تیاری کرنی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ عبدالقادر بہت نیک اور سچے انسان تھے جو اپنا نہیں بلکہ دوسروں کا سوچتے تھے۔ وہ گزشتہ روز جمعہ پڑھنے کیلئے مسجد گئے تو ان کا جوتا چوری ہو گیا جس پر انہوں نے کہا کہ کچھ نہیں ہوتا، سب کچھ یہیں رہ جانا ہے اور وہ ننگے پاﺅں ہی گھر واپس آ گئے۔ ان کا کہنا تھا کہ عبدالقادر بہت نیک اور سچے انسان تھے جو اپنا نہیں بلکہ دوسروں کا سوچتے تھے۔ وہ گزشتہ روز جمعہ پڑھنے کیلئے مسجد گئے تو ان کا جوتا چوری ہو گیا جس پر انہوں نے کہا کہ کچھ نہیں ہوتا، سب کچھ یہیں رہ جانا ہے اور وہ ننگے پاﺅں ہی گھر واپس آ گئے۔

Categories
کھیل

بریکنگ نیوز: عبد القادر کی موت کیسے واقع ہوئی؟ صاحبزادے کے بیان نے معاملے کا رخ ہی بدل کر رکھ دیا

لاہور (ویب ڈیسک ) سابق لیجنڈری کرکٹر عبدالقادر کی موت کیسے واقع ہوئی؟ صاحبزادے کے بیان نے معاملے کو متنازعہ بنا دیا، سلمان قادر کا کہنا ہے کہ والد کو کبھی بھی دل کا مرض لاحق نہیں تھا، آج اچانک ہی تکلیف ہوئی تو ہسپتال لے گئے، تاہم ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ ان کا


ہسپتال پہنچنے سے قبل ہی انتقال ہو چکا تھا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کے مایہ ناز سابق کرکٹر اور جادوگر اسپنر کے طور پر مشہور عبد القادر انتقال کر گئے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق عبد القادر کو دل کا دورہ پڑا جس کے بعد انہیں ہسپتال لے جایا گیا، تاہم وہ راستے میں ہی انتقال کر گئے۔ عبد القادر کے اہل خانہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ جمعہ کے روز ان کی طبیعت اچانک خراب ہوئی۔ عبد القادر نے بتایا کہ انہیں دل میں تکلیف محسوس ہو رہی ہے جس کے بعد انہیں فوری لاہور کے پنجاب کارڈیالوجی ہسپتال لے جایا گیا۔تاہم عبد القادر کو جب تک ہسپتال پہنچایا گیا، تب تک وہ اس جہاں فانی سے کوچ کر چکے تھے۔ اس حوالے سے عبد القادر کے صاحبزادے سلمان قادر نے بتایا ہے کہ ان کے والد کو کبھی بھی دل کا مرض لاحق نہیں تھا۔ آج اچانک انہیں دل میں تکلیف ہوئی تھی جس کے بعد انہیں ہسپتال لے جایا گیا تھا۔ تاہم ڈاکٹرز کا دعویٰ ہے کہ ان کے والد کا ہسپتال پہنچنے سے قبل ہی انتقال ہو چکا تھا۔عبد القادر کو پاکستان کرکٹ کی تاریخ کے عظیم ترین لیگ اسپنر کے طور پر یاد کیا جاتا ہے۔ عبد القادر وزیراعظم عمران خان کے قریبی دوست بھی تھے۔ عبد القدار 15 ستمبر 1955 کو لاہور میں پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے ٹیسٹ کیرئیر کا آغاز 1977 جبکہ ایک روزہ کرکٹ کیرئیر کا آغاز 1983 میں کیا تھا۔ عبدالقادرنے67 ٹیسٹ اور 104 ایک روزہ میچزمیں پاکستان کی نمایندگی کی۔ عبدالقادرنے ٹیسٹ کرکٹ میں 236 اور ون ڈے میں 132 وکٹیں حاصل کی تھیں۔ جبکہ وہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر بھی رہ چکے تھے۔ ان ہی کے دور میں پاکستان نے 2009 کا ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ جیتا تھا۔ عبد القادر کے انتقال پر ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

Categories
کھیل

مکی آرتھر 32 لاکھ روپے مہینے کا لے رہے تھے لیکن مصباح الحق کوبطور کوچ کتنی تنخواہ دی جائے گی؟ حیرت کے جھٹکے کے لیے تیار ہو جائیں

لاہور (ویب ڈیسک )پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق ٹیسٹ کپتان مصباح الحق کو ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر تعینات کر دیا ہے اور اس حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران چیف ایگزیکٹو وسیم خان اور سابق ٹیسٹ کپتان مصباح الحق نے تنخواہ سے متعلق پر نہایت دلچسپ جواب دیتے ہوئے کہا کہ

برابر ہی ہے ۔تفصیلات کے مطابق صحافیوں نے سوا ل و جواب کے وقفے کے دوران پوچھا کہ ” مصباح الحق کا معاوضہ سابق ہیڈ کوچ مکی آرتھر کے برابر ، کم یازیادہ ہے ؟ ۔“ جس پر مصباح الحق نے فوری مسکراتے ہوئے رد عمل دیا کہ ” ایف بی آر “ ، مصباح کی بات سن کر سب ہنسنے لگے ۔ صحافیوں کی جانب سے پھر اصرار کیا گیا کہ کتنی تنخواہ طے پائی ہے جس پر چیف ایگزیکٹو وسیم خان نے مصباح کی طرف دیکھا اور پوچھا کہ جواب دینا چاہیں گے ، آگے سے ہیڈ کوچ نے کہا کہ جی آپ جواب دیں ، دیں آپ جواب۔وسیم خان نے دوبارہ گفتگو کاآغاز کرتے ہوئے کہا کہ ان کی جو پوزیشن ہو گی انہیں پوری عزت اور ذمہ داری ملے گی ، تنخواہ خفیہ بات ہے ۔ صحافیوں نے ایک مرتبہ پھر اصرا ر کیا تو وسیم نے کہا کہ ان کی تنخواہ مکی آرتھر کے برابر ہی ہے ، یہ ہیڈ کوچ ہیں اور چیف سلیکٹر بھی ، ان کی ویلیو ہے ، تو ان کو کم پیسے ہم کیوں دیں گے ۔یاد رہے کہ سابق ہیڈ کوچ مکی آرتھر 20 ہزار ڈالر معاوضہ لیتے تھے جو کہ پاکستان تقریبا 32 لاکھ روپے بنتے ہیں۔ برابر ہی ہے ، یہ ہیڈ کوچ ہیں اور چیف سلیکٹر بھی ، ان کی ویلیو ہے ، تو ان کو کم پیسے ہم کیوں دیں گے ۔یاد رہے کہ سابق ہیڈ کوچ مکی آرتھر 20 ہزار ڈالر معاوضہ لیتے تھے جو کہ پاکستان تقریبا 32 لاکھ روپے بنتے ہیں۔

Categories
کھیل

مکی آرتھر 32 لاکھ روپے مہینے کا لے رہے تھے لیکن مصباح الحق کوبطور کوچ کتنی تنخواہ دی جائے گی؟ حیرت کے جھٹکے کے لیے تیار ہو جائیں

لاہور (ویب ڈیسک )پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق ٹیسٹ کپتان مصباح الحق کو ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر تعینات کر دیا ہے اور اس حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران چیف ایگزیکٹو وسیم خان اور سابق ٹیسٹ کپتان مصباح الحق نے تنخواہ سے متعلق پر نہایت دلچسپ جواب دیتے ہوئے کہا کہ

برابر ہی ہے ۔تفصیلات کے مطابق صحافیوں نے سوا ل و جواب کے وقفے کے دوران پوچھا کہ ” مصباح الحق کا معاوضہ سابق ہیڈ کوچ مکی آرتھر کے برابر ، کم یازیادہ ہے ؟ ۔“ جس پر مصباح الحق نے فوری مسکراتے ہوئے رد عمل دیا کہ ” ایف بی آر “ ، مصباح کی بات سن کر سب ہنسنے لگے ۔ صحافیوں کی جانب سے پھر اصرار کیا گیا کہ کتنی تنخواہ طے پائی ہے جس پر چیف ایگزیکٹو وسیم خان نے مصباح کی طرف دیکھا اور پوچھا کہ جواب دینا چاہیں گے ، آگے سے ہیڈ کوچ نے کہا کہ جی آپ جواب دیں ، دیں آپ جواب۔وسیم خان نے دوبارہ گفتگو کاآغاز کرتے ہوئے کہا کہ ان کی جو پوزیشن ہو گی انہیں پوری عزت اور ذمہ داری ملے گی ، تنخواہ خفیہ بات ہے ۔ صحافیوں نے ایک مرتبہ پھر اصرا ر کیا تو وسیم نے کہا کہ ان کی تنخواہ مکی آرتھر کے برابر ہی ہے ، یہ ہیڈ کوچ ہیں اور چیف سلیکٹر بھی ، ان کی ویلیو ہے ، تو ان کو کم پیسے ہم کیوں دیں گے ۔یاد رہے کہ سابق ہیڈ کوچ مکی آرتھر 20 ہزار ڈالر معاوضہ لیتے تھے جو کہ پاکستان تقریبا 32 لاکھ روپے بنتے ہیں۔ برابر ہی ہے ، یہ ہیڈ کوچ ہیں اور چیف سلیکٹر بھی ، ان کی ویلیو ہے ، تو ان کو کم پیسے ہم کیوں دیں گے ۔یاد رہے کہ سابق ہیڈ کوچ مکی آرتھر 20 ہزار ڈالر معاوضہ لیتے تھے جو کہ پاکستان تقریبا 32 لاکھ روپے بنتے ہیں۔