Categories
پاکستان

وزیراعظم بننے کی جنگ شروع!۔۔عمران خان کے بعد وزارت عظمیٰ کی ذمہ داری کون سنبھالے گا؟ تحریک انصاف سے سب سے مضبوط امیدوار کا نام سامنے آگیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) جب سے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت بنی ہے تب سے ہی موجودہ وزیر اعظم عمران خاں اور اُن کی حکومت کے جانے کی تاریخیں دی جا رہی ہیں قبل ازیں خبریں گردش کرتی رہی ہیں کہ میاں محمد سومرو کو وزیر اعظم بنایا جا رہا ہے تاہم اب حکومتی جماعت کے بڑے حامی صحافی


سینئیر صحافی ڈاکٹر دانش نے دعویٰ کیا ہے کہ موجودہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی وزیراعلیٰ پنجاب بننے کے خواہشمند تھے تاہم انکی پارٹی میں موجود چند اہم لوگوں کی مخالفت سے یہ خواب پورا نہ ہوا لیکن اب وہ وزیراعظم کےاہم امیدوارہونگے۔ ڈاکٹر دانش نے دعویٰ کیا ہے کہ شاہ محمود قریشی وزیراعظم پاکستان بننے کے بڑے امیدوار ہیں۔ خیال رہے کہ جب پاکستان تحریکِ انصاف حکومت میں آئی تو قیاس کیا جا رہا تھا کہ شاہ محمود قریشی وزیراعلیٰ پنجاب بنیں گے لیکن ایسا نہ سکا اور عثمان بزدار کو وزیراعلیٰ پنجاب بنا دیا گیا۔ اب گزشتہ کچھ عرصے سے عثمان بزدار پر استعفے کے لیے دباؤ بڑھتا جا رہا ہے جبکہ وزیراعظم کے حوالے سے بھی دعویٰ کیا گیا ہے کہ وہ جلد عثمان بزدار کو ہٹا دیں گے۔دوسری جانب پیپلز پارٹی سندھ میں سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کی سربراہی میں فارورڈ بلاک بنائے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ مسلسل نیب تحویل میں رہنے کے دوران سپیکر سندھ اسمبلی نے

اپنی ہی پارٹی کیخلاف کام شروع کیا، آغا سراج نے اپنی جماعذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ کے ایک درجن سے زائد ایم پی ایز سے ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں سپیکر نے صوبائی اسمبلی کےارکان کو قائد ایوان کی تبدیلی پر قائل کرنے کی کوشش بھی کی، سپیکر سندھ اسمبلی نے ایسے ارکان سے رابطہ کیا جو پارٹی اور سندھ حکومت سے نالاں تھے۔ذرائع کے مطابق سراج درانی کے روابط کا راز فاش ہونے پر پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے سخت نوٹس لے لیا۔ذرائع کے مطابق پارٹی کی ایم پی ایز سے ملاقاتوں کے بعد ارکان نے ساری بات پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے سامنے رکھ دی، پیپلزپارٹی چیئرمین راز فاش ہونے کے بعد شدید ناراض ہو گئے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی کی جانب سے کسی بھی کارروائی کا فیصلہ بلاول بھٹو کی جانب سے وطن واپسی پر ہو گا، فوری طور پر آغا سراج درانی کیخلاف کارروائی کا امکان نہیں ہے۔ خیال رہے کہ سندھ میں چند عرصے سے پیپلز پارٹی کے اندر فارورڈ بلاک بنانے کی خبریں سامنے آرہی ہیں۔ اس سے قبل پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما مولا بخش چانڈیو نے پیپلز پارٹی میں فارورڈ بلاک بنانے والوں کو وارننگ دیتے ہوئے کہا تھا کہ ایسا کرنے والے

گم ہو جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں پیپلز پارٹی سے لوگوں کو الگ کی جاسکتا ہے لیکن اس سے ہوگا کیا؟ پیپلز پارٹی پھر پوری طاقت سے واپس آئیگی اور فارورڈ بلاک بنانے والے گم ہو جائیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ میں فاورڈ بلاک کی باتیں پرانی ہیں جو بھی پیپلزپارٹی سے الگ ہوئے ، اب وہ کہاںہیں ؟ ان کا کہناتھا کہ پیپلز پارٹی سے جو الگ ہوا ، اس کی کوئی حیثیت نہیں رہی۔ واضح رہے کہ افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ ہ سندھ میں 27 ارکان پر مشتمل فارورڈ بلاک تیار ہے، جس میں تھرپار کر اور نواب شاہ کے ایم پی ایز بھی شامل ہیں۔ اس میں مخدوم فیملی اور نادر مگسی کا نام بھی سامنے آ رہا ہے۔ 27 ارکان پر مشتمل فارورڈ بلاک تیار مراد علی شاہ کی گرفتاری کا انتظار کر رہا ہے.انہوں نے کہا کہ ہو سکتا ہے کہ اگر مراد علی شاہ گرفتار ہو جائیں تو سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت ہی نہ رہے کیونکہ 27اراکین صوبائی اسمبلی پر مشتمل فارورڈ بلاک تیار ہو چکا ہے اور جیسے ہی مراد علی شاہ گرفتار ہوتے ہیں یہ گروپ پیپلز پارٹی چھوڑ کر الگ ہو سکتا ہے جس کے بعد پیپلز پارٹی کی سندھ میں حکومت نہیں رہے گی ایسی صورت میں آصفہ بھٹو زرداری سندھ میں اپوزیشن لیڈر بنیں گی۔

Categories
پاکستان

اچھا تو یہ بات تھی۔۔۔سعودی اور اماراتی وزرائے خارجہ اکھٹے کس مشن پر پاکستان آئے؟ بالاخر کہانی سامنے آگئی، پاکستانیوں کے لیے سرپرائز

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) جب سے بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی ہے کشمیری مسلمانوں پر ظلم کا سلسلہ شروع کیا ہے اور اب تک مقبوضہ کشمیرمیں مسلسل کرفیو کا نفاذ ہے تب سے دو بڑے اسلامی ممالک کی جانب سے کسی قسم کا مذمتی بیان جاری نہیں کیا گیا تھا جس کی وجہ سے اُمت مسلمہ میں شدید غم و غصہ پایا جا رہا ہے کل


دونوں اسلامی ممالک متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب کے وزرائے خارجہ نے اکٹھے پاکستان کا دورہ کیا اور اعلیٰ سیاسی و عسکری قیادت سے ملاقاتیں کیں۔ ان ملاقاتوں کی اندرونی کہانی یہ سامنے آئی کہ عرب دوستوں نے پاکستان پر واضح کیا کہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان تنازع ہے، اسے مسلم امّہ کا مسئلہ نہ بنایا جائے۔اس خبر کو انکشاف کے طور پر نہیں لیا جاسکتا کیونکہ وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی اور فواد چوہدری پہلے ہی پاکستانیوں کو یہ بات سمجھانے کی کوشش کر رہے تھے اور انہیں یہ بات اعلیٰ سطح کے رابطوں کے دوران سمجھ آچکی تھی۔ وزیرِاعظم عمران خان کی حکومت نے اسی لیے اس خبر پر نہ بُرا منایا اور نہ ہی اس کی تردید کی ضرورت محسوس کی گئی۔بھارتی وزیرِاعظم نریندر مودی کو اعلیٰ ترین سول اعزاز دینے کے بعد اماراتی وزیرِ خارجہ کا سعودی ہم منصب کے ساتھ پاکستان آنا اہم ہے۔ ایک تو نریندر مودی کو ایوارڈ دینے سے اماراتی شیخوں کے بارے میں پاکستان میں رائے عامہ متاثر تھی دوسری وجہ یہ تھی کہ یہ واضح کیا جائے کہ نریندر مودی کو ایوارڈ دینے سے عرب امارات پاکستان کے ساتھ دشمنی نہیں کر رہا۔ تیسری وجہ
اسرائیل فلسطین تنازع پر امریکی صدر کے ’ڈیل آف دی سنچری‘ کے اجرا کی تاریخ کا

قریب آنا ہے۔ فلسطین تنازع کو بھی کشمیر کے ساتھ ملا کر دیکھنے کی ضرورت ہے کیونکہ فلسطین پر بھی عربوں کا مؤقف کشمیر کی طرح بدل گیا ہے۔پاکستان میں اماراتی شیخوں سے متعلق رائے عامہ ہمارے وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی پہلے ہی ہموار کرچکے ہیں۔ جہاں تک بات ہے دشمنی کا تاثر ختم کرنے کی تو یہ اماراتی شیخوں کی ضرورت بھی ہے اور مجبوری بھی۔ عالمی سچائی کے طور پر ایک محاورہ سفارت کاری کا حصہ ہے کہ اگر تم اپنے حریف کو شکست نہیں دے سکتے تو اس کے شراکت دار بن جاؤ۔عرب امارات کو سی پیک اور گوادر سے کتنی ہی پرخاش کیوں نہ ہو یہ حقیقت ہے کہ چین سی پیک سے پیچھے ہٹے گا اور نہ ہی گوادر منصوبے کو ناکام ہونے دے گا۔امارات کو ان دونوں منصوبوں سے ڈر ہے لیکن اسے یہ بھی علم ہے کہ وہ انہیں روکنے کی پوزیشن میں نہیں، اس لیے وہ سفارت کاری کے اس سنہرے اصول پر عمل پیرا ہے۔ امارات پاکستان کو دشمن بنانے کی پوزیشن میں نہیں لیکن بھارت کے ساتھ مفادات بھی جڑے ہیں، اس لیے اس نے واضح کردیا ہے کہ کشمیر کو چھوڑ کر باقی تمام امور پر پہلے کی طرح تعلقات اور تعاون برقرار رہے گا۔سعودی وزیرِ خارجہ اماراتی ہم منصب کے ساتھ آئے تاکہ وہ ثالثی کا کام کریں۔ سعودی عرب اور امارات یمن جنگ میں حلیف سے حریف بنتے جا رہے ہیں لیکن سعودی عرب اس امید پر امارات کا ساتھ نبھا رہا ہے کہ

یمن میں امارات جنوبی یمن کی علیحدگی پسند کونسل کی سرپرستی چھوڑ دے گا۔اسرائیل میں 17 ستمبر کو ہونے والے انتخابات کے نتائج کے فوری بعد اسرائیل فلسطین امن منصوبے کی نقاب کشائی ہونا ہے۔ امریکی صدر کے نمائندہ خصوصی برائے مشرق وسطیٰ جیسن گرین بلاٹ کا استعفیٰ اس امن منصوبے میں رکاوٹ نہیں بنے گا بلکہ یہ ایک اشارہ ہے کہ ان کا کام مکمل ہو گیا۔اسرائیل فلسطین تنازع کے ممکنہ حل کے بعد اسرائیل کو تسلیم کرنے کا سوال بھی سر اٹھائے گا۔ اس کے لیے پہلے ہی سعودی عرب اور پاکستان میں بحث شروع کرائی جاچکی ہے۔ سعودی عرب میں حکومت کے ماؤتھ پیس کی حیثیت رکھنے والے صحافی اسرائیل کو تسلیم کرنے کے دلائل پیش کرچکے ہیں

Categories
پاکستان

چھوٹے کاروبار کے لیے 5 لاکھ کی بجائے اب کتنا قرض دیا جائے گا اور کن آسان شرائط پر؟؟ تفصیلات آ گئیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وزیر اعظم عمران خاں نے حکومت میں آنے سے قبل جب اپنا منشور پیش کیا تھا تو اُس میں نوجوانوں کو قرض دینے کا بھی وعدہ کیا گیا تھا تاکہ پاکستانی نوجوان پڑھ لکھ کر فارغ بیٹھنے کی بجائے اپنا کاروبار شروع کر سکیں اس کے لئے پہلے 5لاکھ کی رقم رکھی گئی تھی تاہم اب


حکومت نے چھوٹے قرضوں کی حد بڑھا کر 10لاکھ کردی ہے، چھوٹے قرضوں کی مدت ایک ماہ سے کم کرکے 15دن اوردرمیانے درجے کے قرضوں کی مدت 25 روزکردی گئی ، روزگار کے بے شمار مواقع موجود ہیں، تعمیراتی شعبے کو ہرممکن سہولیات دینا اولین ترجیح ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت معاشی ٹیم کا اجلاس ہوا، اجلاس میں صنعتوں کی ترقی کیلئے اٹھائے جانیوالے سوالات کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں وزیراعظم عمران خان کو گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر نے بریفنگ دی۔ بریفنگ میں وزیراعظم کو بتایا کہ صنعتوں کا فروغ ، زراعت اور تعمیراتی شعبے کی ترقی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔ چھوٹے قرضوں کی حد بڑھا کر 10لاکھ کردی گئی ہے۔چھوٹے قرضوں کی مدت ایک ماہ سے کم کرکے 15دن کردی گئی ہے۔ درمیانے درجے کے قرضوں کی مدت 25 روز کردی گئی ہے۔برآمدات میں ساڑھے 5 ارب ڈالر اضافہ متوقع ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ چھوٹی اوردرمیانی صنعتوں اور زرعی ترقی کا فروغ چاہتے ہیں۔تعمیراتی شعبے کو ہرممکن سہولیات دینا اولین ترجیح ہے۔ملک میں روزگار کے بے شمار مواقع پید اکیے جائیں گے۔ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان سے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ملاقات کی ہے، ملاقات میں سیاسی اور

انتظامی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ملاقات میں صوبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر بھی بات چیت کی گئی۔وزیراعظم عمران خان نے پنجاب میں پولیس تشدد سے ہلاکتوں پر اظہار تشویش کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ پولیس نظام میں اصلاحات لانے کا عمل تیز کیا جائے۔عوام کے جان ومال کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے۔ اسی طرح وزیراعظم عمران خان نے حکومتی ترجمانوں کو آگاہ کیا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کوتبدیل نہیں کیا جارہا ہے۔عثمان بزدار میری ٹیم کا حصہ ہیں۔عثمان بزدار کی کارکردگی سے مطمئن ہوں۔عثمان بزدار کے ساتھ کھڑا ہوں۔ انہوں نے حکومتی ترجمانوں کو ہدایت کی ہے کہ حکومت اقدامات کو درست انداز میں پیش کیا جائے تاکہ عوام کو حکومت کے بارے میں درست آگاہی حاصل ہو سکے

Categories
پاکستان

عمران خان کے ساتھ عثمان بزدار کے متبادل کی تلاش بھی شروع وزیراعظم کیلئے 3 اور وزیر اعلیٰ بننے کتنے امیدوار سامنے آگئے؟

اسلام آباد(نیوزڈیسک) جب 2018 کے جنرل الیکشن ہوئے تو پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن میں کانٹے کا مقابلہ تھا تاہم اس الیکشن میں پاکستان تحریک انصاف کر برتری حاصل رہی عمران خاں پاکستان کے وزیر اعظم منتخب ہوئے تو سیاسی مخالفین نے اُن کو سلیکٹڈ کہنا شروع کر دیا اور انتخابات میں دھاندلی کا الزام لگایا

مسلم لیگ (ن) پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمی بخاری نے کہا ہے کہ پنجاب پولیس کوغیر سیاسی کرنے کا نعرہ لگانے والوں نے پولیس کو شہریوں کو مارنے کا لائسنس دیدیا ہے،پولیس تشدد سے ہلاکتوں میں روزبروز اضافہ بزدار حکومت کی نالائقی کا ثبوت ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس کی ایک سالہ کارکردگی ڈی پی او پاکپتن کے تبادلے سے شروع ہوکر صلاح الدین کی ہلاکت پر آگئی ہے۔پولیس ریفارمز کا شور مچانے والا ٹولہ بنی گالہ میں چھپ گیا ہے۔جب سلیکٹڈ لوگ کسی ملک پر مسلط کردئیے جائیں تو عوام جلاد اور ظالم نظام کے رحم و کرم پر ہوتی ہے۔ عظمی بخاری نے کہا کہ وفاق اور پنجاب میں ہر حکومتی رکن وزیر اعظم اور وزیر اعلی پنجاب کے دوڑ میں شامل ہے۔ٹیم سلیکٹ کرنے والوں سے تاریخی غلطی ہو گئی ہے ۔چیف سلیکٹر نے عمران خان اور عثمان بزدار کے متبادل تلاش کرنا شروع کردئیے ہیں۔وزیراعظم کے تین اور وزیر اعلی پنجاب کے پانچ امیدر وار سامنے آچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کی آزادی اور پاکستان کی خوشحالی کوٹ لکھپت جیل میں قید ہے ۔ دوسری جانب سینئر تجزیہ کار نجم سیٹھی نے نجی ٹی وی کے پروگرا م میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ جو بات کرتے ہیں اس میں حقیقت ہے کہ کیونکہ جو پنگا لیتا ہے اس کا

حشر توسب نے دیکھ لیا ہے۔ڈیل کی آفر ضرور ہورہی ہے۔ لیکن ڈیل کی آفر نوازشریف کی طرف سے نہیں بلکہ اسٹیبلشمنٹ کی طرف سے ہورہی ہے۔ اور اس ڈیل کے 2مقاصد ہیں، ایک یہ مقصد ہے کہ میاں نوازشریف تسلیم کرلیں کہ وہ کرپٹ ہیں، کیونکہ ڈیل توکرپٹ لوگ ہی لیتے ہیں دوسرا یہ کہ وہ چپ چاپ بیٹھ جائیں۔دیکھا جائے گا کہ کیا ہوتا ہے۔ جو پولیٹیکل انجینئرنگ پہلے کی ہے اس کو مزید مضبوط کیا جائے گا ۔پھر آگے جا کر دیکھیں کہ میاں نوازشریف کے ساتھ کیا رویہ اختیار کرنا ہے ۔ نجم سیٹھی نے کہا کہ ایک تھیوری یہ بھی ہے کہ جیل سپرنٹنڈنٹ میاں نوازشریف کے پاس گیا اور کہا کہ ابھی درخواست دیں ہم آپ کو ہسپتال منتقل کردیتے ہیں۔پھر وہاں سے ایک اور درخواست دینا آپ کی رہائی ہوجائے گی، اور آپ کا نام ای سی ایل بھی نکال دیا جائے گا، وہ فیصلہ بھی ہم عدالتوں سے کروالیں گے، پھر آپ بیرون ملک چلے جانا۔لہذا آپ ڈیل کرلیں، چلے جائیں۔ پھر واپس آجانا ، یہ کون سی کوئی ڈیل ہے؟ لیکن اس کے طربرعکس ساری عمر یہاں جیل میں بیٹھے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیل کیوں آفر ہو رہی ہے؟اس لئیے کہ عمران خان کی حکومت نہیں چل رہی،حالات خراب ہو رہے ہیں، ان کا ووٹ بینک گر رہا ہے۔ میاں صاحب ڈٹ کے بیٹھے ہیں۔ لوگ دلیر آدمی کو پسند کرتے ہیں۔ میاں صاحب اور ان کی جماعت کی کریڈیبیلیٹی بڑھ رہی ہے۔ پہلے بھی الیکشن جیت چکے تھے،آج پھر کرا لیں تو

جیت جائیں گے۔”نہیں چل رہی،حالات خراب ہو رہے ہیں، ان کا ووٹ بینک گر رہا ہے۔ میاں صاحب ڈٹ کے بیٹھے ہیں۔ لوگ دلیر آدمی کو پسند کرتے ہیں۔ میاں صاحب اور ان کی جماعت کی کریڈیبیلیٹی بڑھ رہی ہے۔ پہلے بھی الیکشن جیت چکے تھے،آج پھر کرا لیں جیت جائیں گے۔”آج الیکشن کرالیں، نوازشریف پھر جیت جائیں گے،عمران خان کی حکومت نہیں چل رہی،ان کا ووٹ بینک گر رہا ہے، جبکہ میاں صاحب ڈٹ کے بیٹھے ہیں،لوگ دلیرآدمی کو پسند کرتے ہیں،ان کی جماعت کی کریڈیبیلیٹی بڑھ رہی ہے انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرا م میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ جو بات کرتے ہیں اس میں حقیقت ہے کہ کیونکہ جو پنگا لیتا ہے اس کا حشر توسب نے دیکھ لیا ہے۔

Categories
پاکستان

اگر آج ملک میں الیکشن ہوں تو کون سی پارٹی الیکشن جیت جائے گی ؟ ملک کے بڑے صحافی نے حقائق کو مدنظر رکھ کر بڑا سرپرائز دے دیا

اسلام آباد(نیوزڈیسک) جب 2018 کے جنرل الیکشن ہوئے تو پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن میں کانٹے کا مقابلہ تھا تاہم اس الیکشن میں پاکستان تحریک انصاف کر برتری حاصل رہی اس طرح وفاق، پنجاب،اور کے پی کے میں تحریک انصاف کی حکومت بنی جبکہ بلوچستان میں اُس کے اتحادیوں کی حکومت بنی تھی


موجودہ حالات پرسینئر تجزیہ کار نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ نواز شریف کو ڈیل کی آفر ضرور ہورہی ہے۔ لیکن ڈیل کی آفر نوازشریف کی طرف سے نہیں بلکہ اسٹیبلشمنٹ کی طرف سے ہورہی ہے۔ اور اس ڈیل کے 2مقاصد ہیں، ایک یہ مقصد ہے کہ میاں نوازشریف تسلیم کرلیں کہ وہ کرپٹ ہیں، کیونکہ ڈیل توکرپٹ لوگ ہی لیتے ہیں دوسرا یہ کہ وہ چپ چاپ بیٹھ جائیں۔ دیکھا جائے گا کہ کیا ہوتا ہے۔ جو پولیٹیکل انجینئرنگ پہلے کی ہے اس کو مزید مضبوط کیا جائے گا ۔پھر آگے جا کر دیکھیں کہ میاں نوازشریف کے ساتھ کیا رویہ اختیار کرنا ہے ۔ نجم سیٹھی نے کہا کہ ایک تھیوری یہ بھی ہے کہ جیل سپرنٹنڈنٹ میاں نواز شریف کے پاس گیا اور کہا کہ ابھی درخواست دیں ہم آپ کو ہسپتال منتقل کردیتے ہیں۔پھر وہاں سے ایک اور درخواست دینا آپ کی رہائی ہوجائے گی، اور آپ کا نام ای سی ایل بھی نکال دیا جائے گا، وہ فیصلہ بھی ہم عدالتوں سے کروالیں گے، پھر آپ بیرون ملک چلے جانا۔لہذا آپ ڈیل کرلیں، چلے جائیں۔ پھر واپس آجانا ، یہ کون سی کوئی ڈیل ہے؟ لیکن اس کے برعکس ساری عمر یہاں جیل میں بیٹھے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیل کیوں آفر ہو رہی ہے؟اس لئیے کہ عمران خان کی حکومت

 

نہیں چل رہی،حالات خراب ہو رہے ہیں، ان کا ووٹ بینک گر رہا ہے۔ میاں صاحب ڈٹ کے بیٹھے ہیں۔ لوگ دلیر آدمی کو پسند کرتے ہیں۔ میاں صاحب اور ان کی جماعت کی کریڈیبیلیٹی بڑھ رہی ہے۔ پہلے بھی الیکشن جیت چکے تھے،آج پھر کرا لیں جیت جائیں گے۔”آج الیکشن کرالیں، نوازشریف پھر جیت جائیں گے،عمران خان کی حکومت نہیں چل رہی،ان کا ووٹ بینک گر رہا ہے، جبکہ میاں صاحب ڈٹ کے بیٹھے ہیں،لوگ دلیرآدمی کو پسند کرتے ہیں،ان کی جماعت کی کریڈیبیلیٹی بڑھ رہی ہے انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرا م میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ جو بات کرتے ہیں اس میں حقیقت ہے کہ کیونکہ جو پنگا لیتا ہے اس کا حشر توسب نے دیکھ لیا ہے۔

Categories
پاکستان

یہ ہمت عمران خان کے علاوہ اور کسی میں نہیں۔۔۔انتقال سے قبل عبدالقادر نے وزیراعظم عمران خان بارے کیا الفاظ کہے تھے؟ جانئے

لاہور (نیوز ڈیسک)پاکستان کے سابق مایہ ناز کرکٹرلیگ اسپنر اور گگلی ماسٹرعبدالقادر گزشتہ روز لاہور میں خالق حقیقی سے جا ملے وہ حرکت قلب بند ہوجانے کے بعد ہسپتال لے جاتے ہوئے راستے میں ہی خالق حقیقی سے جا ملے۔انتقال سے ایک دن پہلے لاہور میں ایک تقریب میں عبدالقادر  کا کہنا تھا کہ اگر وزیر اعظم عمران خان نے


غربت اور معیشت کو کنٹرول کر لیا تو پاکستان کو اس جیسا لیڈر نہیں مل سکتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان نے وائٹ ہاﺅس میں ٹرمپ کے سامنے جس پرائیڈ کے ساتھ ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بات کی تھی پوری دنیا میں کسی کی ہمت نہیں تھی کہ اس انداز پر کشمیر کی بات کرے، ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے 70 سال میں مودی کو للکارا اور کشمیر کو آزادی کے قریب لے آئے ہیں۔کرکٹ حلقوں میں ’باﺅ‘ کے نام سے شہرت رکھنے والے عبدالقادر نے پیش امام کے گھر آنکھ کھولی، وہ غریب فیملی سے عالمی شہرت یافتہ سپنر بنے لیکن کلمہ حق بولنے سے نہیں ڈرتے تھے۔گزشتہ سال اگست میں عمران خان نے وزیر اعظم کا حلف لینے کےلئے اپنے جن بے تکلف دوستوں کو مدعو کیا تو ان میں عبدالقادر بھی شامل تھے۔وزیر اعظم ہاﺅس میں اس تقریب کے بعد عمران خان نے پرانے کرکٹر دوستوں کے ساتھ نشست میں اپنی اس پرانی خواہش کا اظہار کیا کہ ڈپارٹمنٹ کی ٹیموں کو ختم کرنا ناگزیر ہے تو عبدالقادر نے بر ملا کہا کہ عمران ان سب میں سے کسی میں ہمت نہیں ہے کہ کچھ بولے مگر براہ مہربانی ڈپارٹمنٹ کی ٹیموں کو بند نہ کرنا یہ بڑی غلطی ہوگی۔ عینی شاہدین کے مطابق عمران خان مسکرائے بغیر نہ رہ سکے کیونکہ

انہیں علم تھا کہ عبدالقادر سچ بولے بغیر نہیں رہ سکتے۔عبدالقادر نے 67 ٹیسٹ اور 104 ایک روزہ میچز میں پاکستان کی نمائندگی کی، انکا شمار دنیائے کرکٹ کے مایہ ناز سپنرز میں ہوتا تھا عبدالقادر نے ٹیسٹ کرکٹ میں 236 اور ون ڈے میں 132 وکٹیں حاصل کیں۔عبدالقادر کو جب1982ءکے دورہ انگلینڈ میں عمران خان نے پاکستان ٹیم میں شامل کیا تو انگلش ماہرین اور کرکٹرز اس جادوگر کو دیکھ کر حیران رہ گئے انہیں مشرق کے جادوگر کا نام دیا گیا۔

Categories
پاکستان

صلاح الدین ATM میں کس طرح واردات ڈالتا تھا اور پکڑے جانے سے پہلے کتنی مشینیں توڑ چکا تھا؟ تصویر کے دوسرے رخ نے تہلکہ مچا دیا

لاہور(نیوز ڈیسک) ایک جانب تو صلاح الدین کی موت پر سشل میڈیا پر پولیس اور حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے مگر تصویر کا دوسرا رخ! یہ اے ٹی ایم حبیب بنک وحدت روڈ لاہور کی ہے 7 :15 منٹ پر داخل ہونے والے شخص کی رہائش بھی ساتھ وارث کالونی میں ہے اور ساتھ کھڑا شخص

صلاح الدین ہے جو پولیس تشدد سے ہلاک ہوچکا ہے یہ نا تو زھنی مریض تھا نہ ہی گونگا یا اللہ لوک یہ گونگا بننے کی اور اشاروں سے بات کرنے کی اداکاری کر رہا تھا طریقہ واردات یہ تھا کہ سب سے پہلے اس نے جہاں سے پیسے نکالے جاتے ہیں وہاں پر سلپ کی پرچیاں گھسا دیتا ہے تاکہ پیسے باہر نا آسکیں اور اسکے اور پھر مشین کو توڑنے کی کوشش کرتا ہے تاکہ اسکے اندر وائس ڈیوائس رکھے وہ نیں ٹوٹتی تو مشین کی بیک سائیڈ پر ایک ڈیوائس چھپا دیتا ہے اور اسکا ریموٹ اپنے ہاتھ میں لے لیتا ہے اور ایک کارنر میں کھڑا ہوجاتا ہے اور پاسورڈ دیکھنے کی کوشش کرتا ہے اور ریموٹ دباتا ہے تو وائس ڈیوائس سے آواز آتی ہے “اپکا کارڈ کیپچر ہوگیا ہے برانچ سے رابطہ کریں اس وقت برانچ بھی بند ہوتی ہے وہ بندہ باہر جاتا ہے تو یہ فورا کارڈ نکالتا ہے اور باہر نکل جاتا ہے پاس ورڈ بھی اسکے پاس ہوتا ہے کارڈ بھی اسکے پاس ہوتا ہے کسی بھی دوسری برانچ سے جا کے پیسے نکلوالیتا ہے یہ بندہ جو 7:15 پر داخل ہوتا ہے اسکے اکاونٹ سے اس بندے نے کریم بلاک برانچ الائیڈ بنک سے 7:35 منٹ پر 25000 ہزار کی 2 ترانزکسن کیں اور 50 ہزار نکلوا کر لے گیا صرف 20 منٹ میں لیکن پولیس تشدد کی اجازت پھر بھی نیں دی جاسکتی یہ

ویڈیو 2017 کی ہے منٹ پر 25000 ہزار کی 2 ترانزکسن کیں اور 50 ہزار نکلوا کر لے گیا صرف 20 منٹ میں لیکن پولیس تشدد کی اجازت پھر بھی نیں دی جاسکتی یہ ویڈیو 2017 کی ہے

Categories
پاکستان

یہ وقت بھی آنا تھا ۔۔۔ انتقال کے بعد عابد علی کے ساتھ کیا سلوک کیاگیا؟ مرحوم اداکار کی بیٹی نے روتے ہوئے ایسا پیغام جاری کر دیا کہ ہر کوئی افسردہ ہوگیا

کراچی (نیوز ڈیسک) پاکستان کے نامور لیجنڈ اداکار عابد علی گزشتہ روز طویل علالت کے بعد اس دنیائے فانی سے رخصت ہوگئے مرحوم کافی عرصے سے دل کے عارضہ میں مبتلا تھے مرحوم کا شمار ایسے اداکاروں میں ہوتا تھا جن کو اپنے فن سے بے حد لگن تھی اُن کی بیٹی ایمان علی بھی شوبز سے وابستہ ہے اداکار

عابد علی کے انتقال پر پر شوبز انڈسٹری میں سوگ پایا گیا ۔ پاکستان ٹیلی ویژن کے کلاسیک عہد میں وارث جیسے ڈرامے سے شہرت حاصل کرنے والے معروف اداکار عابد کی عمر 67 سال تھی۔ مرحوم اداکار عابد علی کی بیٹی رحمہ علی باپ کی موت پر انتہائی دکھی دکھائی دیں ۔ انھوں نے ہسپتال سے ہی ایک ویڈیو پیغام جاری کیا جس میں انھوں نے اپنی سوتیلی ماں پر بدسلوکی کا الزام لگایا اور باپ کی لاش کو اپنے ساتھ لے جانے کی شدید مذمت کی ۔ انھوں نے ہسپتال سے جاری کیے گئے ایک ویڈیو پیغام میں کہا کہ ” میں آپ سب کو ایک حقیقت بتانا چاہتی ہوں ، پاپا کی دوسری بیوی رابعہ نورین ، انکی باڈی (لاش ) لیکرہسپتال سے چلی گئی ہیں ۔یہاں ہسپتال میں ، میں ، میری ماں ، میری پھوپھی اور پھوپھا موجود ہیں اور ہمیں کسی نے بھی باپ کی لاش نہیں دی ہے ۔ اب ہم یہ بھی نہیں جانتے کہ کہاں جائیں ہم لوگ ۔ ہم لوگ یہ بھی نہیں جانتے کہ وہ باپ کی لاش لیکر کہاں گئی ہیں”۔ اداکار عابد علی کی بیٹی رحمہ علی نے مزید کہا کہ” مجھے میری پھو پھو نے پیغام دیا ہے کہ ہم تمام عورتیں جن میں ، میں ، میر ی ماں اور میری پھوپھو شامل ہیں کیونکہ

ہم رابعہ نورین کے گھر نہیں جاسکتی کیوں کہ رابعہ نورین نے اپنے گھر آنے سے منع کیا ہے ۔ میری سوتیلی ماں نے ہمیں جنازے کے متعلق بھی نہیں بتایا ہے کہ جنازہ کب اور کہاں ہوگا ۔ اور اب ہم لوگ یہ بھی نہی جانتے کہ ہم سب لوگ جو عابد علی کے بیٹیاں اور بہنیں ہیں کیا کریں ؟ “۔ عابد علی کی بیٹی کا مزید کیا کہنا تھا؟ ویڈیو آہ بھی دیکھیں:یاد رہےکہ اداکار عابد علی نے پہلی بیوی سے علیحدگی کے بعد معروف اداکار رابعہ نورین سے شادی کر لی تھی ۔

Categories
پاکستان

ارشاد بھٹی نے وزیر اعظم عمران خاں کو اُن کا وعدہ یاد دلادیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پنجاب کی پولیس اس وقت عوام کے لئے وبال جان بن چکی ہے لوگ خود کو غیر محفوظ سمجھتے ہیں آئے روز کوئی نہ کوئی ایسا واقعہ دیکھنے کو ملتا ہے کہ جو انسانیت کے منہ پر تمانچہ ہوتا ہے سانحہ ساہیوال کے بعد بھی پولیس میں اصلاحات نہیں لائی جا سکیں.ایسے میں


سینئر صحافی ارشاد بھٹی نے وزیر اعظم عمران خاں کو اُن کا وعدہ یا د دلا دیا ہے . پاکستانیوں میں اس وقت غم و غصہ پایا جا رہا ہے کیونکہ صلاح الدین کی پولیس میں بدترین تشدد کے بعد ہلاکت نے پنجاب پولیس کی کارکردگی کا پول کھول کر رکھ دیا ہے، ایسے میں وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ پنجاب کو بھی شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہعمران خان نے اقتدار میں آنے سے پہلے یہ اعلان کیا تھا کہ وہ پولیس ریفارمز کر کے پورے محکمے میں بہتری لائیں گے، لیکن پہلے سانحہ ساہیوال اور پھر صلاح الدین جیسے واقعات نے حکومت کے دعوؤں کی قلعی کھول کر رکھ دی ہے۔ ایسے میں سینئر صحافی ارشاد بھٹی بھی میدان میں آگئے ہیں اور انہوں نے وزیر اعظم عمران خان کو ا نکا ہی کیا ہوا وعدہ یاد دلا دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام چھوڑتے ہوئے سینئر صحافی و تجزیہ کار ارشاد بھٹی کا کہنا تھا کہ ’’ قائدِ انقلاب آپ نےسانحہ ساہیوال ہونےپر کہاتھاقطرواپسی پرپنجاب پولیس ڈھانچے کاجائزہ لےکر اصلاح کروں گا۔۔آج آپکی اس بات کو بھی8ماہ10دن ہو گئے،پولیس حراست میں صلاح الدین،عامر مسیح،امجد ذوالفقار ہلاکتوں کےبعد آج تو پولیس نےایک ماں کو بھی بےعزت کردیا،اب انتظارکس بات کا ‘‘سینئر صحافی کی جانب سے وزیر اعظم عمران خان کے سانحہ ساہیوال پر 21 جنوری کو کیے جانے والے ٹویٹ کو ری ٹویٹ کرتے ہوئے یہ بات کہی۔

خیال رہے کہ 21 جنوری کو وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے ن سانحہ ساہیوال پر ٹویٹ کیا گیا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ’’ ساہیوال واقعے پر عوام میں پایا جانے والا غم و غصہ بالکل جائز اور قابلِ فہم ہے۔ میں قوم کو یقین دلاتا ہوں کہ قطر سے واپسی پر نہ صرف یہ کہ اس واقعے کے ذمہ داروں کو عبرت ناک سزا دی جائے گی بلکہ میں پنجاب پولیس کے پورے ڈھانچے کا جائزہ لوں گا اور اس کی اصلاح کا آغاز کروں گا۔‘‘

Categories
پاکستان

شنیرا اکرم نے کراچی کا ساحل عوام کیلئے بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے شرمناک تصاویر شیئر کر دیں، دیکھ کر ہر پاکستانی کا سر شرم سے جھک جائے

کراچی(نیوز ڈیسک ) پاکستان کی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور سوئنگ کے سلطان ووسیم اکرم کی پہلی اہلیہ انتقال کر گئی تھیں جس کے بعد وسیم اکرم نے آسٹریلوی شہری شنیرا سے اپنی دوسری شادی کی تھی . شنیرا اکرم پاکستانی عوام میں اب گھل مل چکی ہیں اور خود کو پاکستانی تصور کرتی ہیں.


اب قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم کی اہلیہ شنیرا اکرم نے کراچی کے ساحل سمندر سی ویو کو عوام کیلئے خطرناک اور غیر محفوظ قرار دہتے ہوئے اسے بند کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے اور اس کیساتھ ہی ساحل پر پھیلے ہسپتال کے فضلے کی تصاویر بھی شیئر کر دی ہیں۔شنیرا اکرم نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر چند تصاویر شیئر کیں جن میں دیکھا جا سکتا ہے کہ سی ویو پر بڑی تعداد میں استعمال شدہ سرنجیں اور ہسپتال کا فضلہ بکھرا پڑا ہے۔پوسٹ شیئر کرکے شنیرا اکرم نے سب کو آگاہ کیا کہ ساحل کلفٹن پر یہ فضلہ خطرناک حدیں پار کرچکا ہے لہٰذا اسے فوری طور پر بند کردیا جائے۔شنیرا اکرم نے ٹوئٹر پوسٹ میں لکھا کہ سی ویو ساحل پر مت جائیں اسے صاف کرنے کی کوشش کریں، یہ انتہائی خطرناک فضلہ ہے اس علاقے پر پابندی عائد کی جائے اور اسے انتظامیہ سے صاف کرایا جائے۔شنیرا اکرم نے مزید لکھا کہ ضرورت ہے کہ فوری طور پر سب کو بتادیا جائے کہ ساحل سمند غیر محفوظ ہے۔شنیرا اکرم نے غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایسا لگتا ہے جیسے ہسپتال میں جن چیزوں سے خوف آتا ہے وہ سب ہمارے ساحل سمندر پر دھوئی جاتی ہیں، اسے روکنا ہوگاجوکہ بہت ضروری ہے.

Categories
پاکستان

پاکستان اور بھارت کے مابین حالات کشیدہ ہونے پر ایئر پورٹس پر بڑی کاروائی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) مسئلہ کشمیر کی وجہ پاکستان اور بھارت کی فوجیں آمنے سامنے ہیں بھارتی فوج بلا اشتعال فائرنگ کر کے پاکستانی آبادی کو نشانہ بنا رہی ہے جس کہ پاکستانی فوج موثر کاروائی کر کے بھارتی فوج کو نشانہ بنا رہی ہے جس سے بھارتی توپ خانہ خاموش ہو جاتا ہے اب

پاکستان اور انڈیا کے مابین ملکی فضائی سرحدوں کی موثر نگہبانی و نگرانی کیلیے مزید 9 جدید ریڈار نصب کر دیے گئے۔ملکی فضائی سرحدوں کی موثر نگہبانی و نگرانی کیلیے مزید 9 جدید ریڈار سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ملک کے اہم مرکزی ایئرپورٹس پر نصب کیے ہیں، نصب کیے جانے والے جدید ریڈارکے بعد ملکی فضائی سرحدوں اور فضائی حدود کی موثر حفاظت اور نگرانی کی جا سکے گی، یہ ریڈار پہلے لگائے جانے والے ریڈار کے مقابلے میں کئی گنا زیادہ وسیع رینج رکھتے ہیں۔نئے ریڈار کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ، لاہور اور اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹس کے علاوہ روجھان، پسنی، لک پاس میں لگائے گئے ہیں، لگائے گئے ریڈار میں سے 3 پرائمری سرویلنس ریڈار اور6 سیکنڈری سرویلنس ریڈارشامل ہیں جو چیک ری پبلک اور اسپین میں تیار کیے گئے ہیں۔نئے لگائے گئے تمام ریڈار مکمل طور پر آپریشنل ہیں، کراچی، لاہور اور اسلام آباد کے مرکزی ایئر ٹریفک منیجمنٹ سسٹم کے ساتھ منسلک کر دیے گئے ہیں جن کے لگنے کے بعد سول ایئر ٹریفک کی نگرانی اور حفاظت کی رینج مزید بڑھ جائے گی۔ واضح رہے کہ غیر فوجی فضائی آپریشنزکا ریگولیٹر ہونے کے ناطے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی پاکستانی ایئر اسپیس (فضائی حدود) میں فضائی ٹریفک محفوظ اور

رواں رکھنے کا ذمے دار ہے تاکہ اس کے فضائی حدود اور ملکی فضائی حدودکے اوپر سے گزرنے والے طیاروں کیلیے کسی قسم کا رسک نہ ہونے کے برابر ہو جائے۔یاد رہے اس سے پہلے 27 فروری کو ہونے والے واقعے کے بعد پاک بھارت کشیدگی کے بعد حفاظتی اقدامات کے تحت پاکستان کی جانب سے بند کی جانے والی مشرقی فضائی حدود سول ایوی ایشن اتھارٹی نے غیر اعلانیہ طور پر بند کردی تھیں۔ان فاضائی حدود کو کھولنے کا اعلان کردیا گیا ہے تاہم سول ایوی ایشن اتھارٹی کا کہنا ہے کہ بھارت کی جانب سے پاکستان میں داخل ہونے والی فضائی حدود تاحال بند رہے گی۔بھارت سے آنے والی کوئی پرواز پاکستتانی حدود میں داخل نہیں ہوسکے گی، اس حوالے سے سی اے اے نے ائر لائن انتظامیہ کو نوٹم بھی جاری کردیا ہے، سول ایوی ایشن اتھارٹی کے جاری کردہ نوٹم کے مطابق سیالکوٹ، رحیم یارخان اور بہاولپور ائیر پورٹ بند رہیں گے۔ سی اے اے نے بین الاقوامی ٹرانزٹ پروازوں کے لیے فضائی حدود کی بندش میں 11مارچ تک توسیع کردی ہے، پاکستانی فضائی حدود سے گزرنے والی پروازیں11مارچ دوپہر3بجے تک بند رہے گی۔سی اے اے نوٹم میں مزید کہا گیا ہے کہ ملک کے فعال ہوائی اڈوں پر15مارچ تک جزوی طور پر آپریشن بحال رہے گا جبکہ غیر فعال ائیر پورٹس27فروری سے فضائی آپریشن کے لیے مکمل طور پر بند ہیں۔پھر دو مارچ کو پاکستان کی فضائی حدود کو جزوی طور پر بحال کیا گیا تھا، جس کے تحت ملک کے چار ایئر پورٹس پر پروازیں آپریٹ کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔ابتدائی طور پر کراچی، اسلام آباد، پشاور اور کوئٹہ ایئر پورٹس پر فضائی آپریشن کی اجازت دی گئی۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے جاری کردہ نوٹم میں مخصوص ایئر پورٹس کی بحالی کا ذکر کیا گیا ہے۔پھر اس کے بعد بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کیے جانے کے بعد پاکستان نے بھارت کے لیے اپنی فضائی حدود دوبارہ سے بند کرنے پر غور شروع کر دیا ہے۔ ترجمان قومی ائیرلائن کے مطابق بھارت کے لیے پروازیں چلانے کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ مقبوضہ کشمیر سے متعلق بھارتی اقدام کے بعد سرحدوں پر سخت کشیدگی ہے اور اس صورتحال میں بھارتی فضائیہ کسی بھی وقت پاکستانی حدود کی خلاف ورزی کرسکتی ہے،جس کی نشاندہی کے لیے پاکستان کی فضائی حدود بھارت سے آنے والے طیاروں کے لیے بند کرنے کی تجویز زیر غور ہے ۔یاد رہے کہ مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں 14 فروری کو ایک کار خود کش دھماکے میں 40 بھارتی فوجی ہلاک ہوئے تھے جس کا الزام بھارت نے براہ راست پاکستان پر عائد کیا تھا۔پلوامہ واقعے کے بعد صورتحال کشیدہ ہوئی اور 26 فروری کی رات بھارتی فضائیہ نے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کی جس پر پاک فضائیہ کی بروقت جوابی کارروائی پر بھارتی طیارے بالاکوٹ کے قریب نصب ہتھیار پھینکتے ہوئے بھاگ نکلے تھے۔جس کے بعد بدھ کی صبح 27 فروری کو پاک فضائیہ نے بھارت کو سرپرائز دیتے ہوئے بھارت کے دو طیارے مار گرائے جبکہ ایک بھارتی پائلٹ کو بھی گرفتار کر لیا گیا تھا۔تاہم بعد میں پارلیمنٹ سے اپنے خطاب میں وزیر اعظم پاکستان عمران خاں نے اگلے روز ہی بھارتی پائلٹ ابھی نندن کی واپسی کا اعلان کر کے دنیا کو امن کا پیغام دیا تھا.

Categories
پاکستان

وزیر اعظم عمران خاں کے امریکہ کے دورے کا شیڈول تبدیل … امریکہ سے پہلے کس بڑے ملک پہنچ رہے ہیں ؟ بڑی خبر

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وزیر اعظم عمران خاں نے کچھ عرصہ قبل امریکہ کا دورہ کیا تھا جو ہر لحاظ سے ایک کامیاب دورہ تھا جس میں ویر اعظم عمران خاں نے کھل کر پاکستان کا موقف پیش کیا اور پاکستانی کی نمائندگی بھرپور انداز میں کی اب وزیر اعظم 21 ستمبر کو امریکہ کے دورے پر جا رہے ہیں مگر اس سے قبل


وزیر اعظم عمران خاں کے 19 ستمبر کو سعودی عرب کے دورے کا بھی امکان ہے.اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کا 19ستمبر کو سعودی عرب روانگی کا امکان ہے۔ وزیراعظم عمران خان 21 ستمبر کو امریکا پہنچیں گے۔یو این اجلاس کے دوران وزیراعظم عالمی رہنماؤں سے ملاقات کریں گے۔یو این اجلاس میں پاکستان کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کو بھرپور انداز میں اٹھایا جائے گا۔خیال رہے کہ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی دوسری ملاقات رواں برس ستمبر میں ہونے کا امکان ہے۔ جس میں افغان امن عمل اور پاک بھارت تعلقات کے ساتھ ساتھ معیشت، دفاع اور توانائی سمیت دیگر شعبوں میں تعاون کے فروغ پر بات چیت گی۔قومی اخبار میں شائع رپورٹ میں بتایا گیا کہ دونوں رہنماؤں کے مابین یہ ملاقات اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس کے سائیڈ لائن پر ہوگی جہاں وزیراعظم عمران خان پاکستان کی نمائندگی کریں گے جبکہ دیگر عالمی رہنماؤں کی طرح امریکی صدر بھی وہاں موجود ہوں گے ۔ سفارتی ذرائع کے مطابق وزیراعظم پاکستان عمران خان اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مابین مختصر عرصے میں دوبارہ ملاقات کا ہونا اس بات کی غمازی کرتا ہے کہ پاکستان اور امریکہ ماضی کی تلخیاں پس پشت ڈال کر آگے بڑھ رہے ہیں.
دونوں ممالک کے تعلقات میں کشیدگی ختم ہوگئی ہے اور آنے والے دنوں میں باہمی معاشی، دفاعی اور توانائی کے شعبہ میں تعلقات میں وسعت دیکھنے میں آئے گی۔ وزیراعظم عمران خان ایک طرف جہاں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے اپنے خطاب میں مسئلہ کشمیر کے حل پر زور د یں گے۔ وہیں دوسری جانب وہ امریکی صدر کے ساتھ ملاقات میں بھی اس اہم تنازعہ کے حل کی اہمیت کو اجاگر کریں گے ۔ وزیراعظم پاکستان اپنے دورہ نیویارک میں امریکی صدر کے علاوہ دیگر اہم عالمی رہنماؤں کے ساتھ بھی ملاقاتیں کریں گے جن میں علاقائی اور عالمی معاملات پر بات چیت گی۔وزیر اعطم عمران خاں کا یہ دورہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے.

Categories
پاکستان

صرف یہ کام کریں اور عمران خان کی حکومت ختم، اسٹیبلشمینٹ نے نواز شریف کو پیغام بھجوا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پہلے حکومت کی جانب سے یہ کہا جا رہا تھا کہ جیل میں قید نواز شریف این آر او چاہتے ہیں مگر حکومت کسی صورت بھی این آر او نہیں دے گی مگر شریف برادران کی جانب سے اس کی سختی سے تردید کی جاتی رہی ہے اب ایک اہم اور حیران کن خبر سامنے آئی ہے جس میں


غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف نے اسٹیبلشمنٹ کو پیغام پہنچا دیا ہے کہ وہ ملک سے باہر نہیں جائیں گے۔ رپورٹ کے مطابق نواز شریف کوٹ لکھپت جیل کی سلاخوں کے پیچھے اسٹیبلشمنٹ کے خلاف اپنی زندگی کی سب سے مشکل جنگ لڑ رہے ہیں جبکہ دوسری جانب اسٹیبلشمنٹ کو بھی 70 سالہ تسلط میں اس وقت سب سے زیادہ چیلنجز کا سامنا ہے۔نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز نے ڈیل سے متعلق ہر طرح کی پیشکش کو مسترد کر دیا ہے۔ اطلاعات ہیں کہ اسٹیبلشمنٹ نے نواز شریف سے رابطہ کیا ہے اوراس مرتبہ ان کے چھوٹے بھائی اور مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کو بھی یہی کہا گیا کہ وہ اپنا اینٹی اسٹیبلشمنٹ مؤقف تبدیل کریں اور کچھ ماہ کے لیے بیرون ملک چلے جائیں۔اس معاملے پر مسلم لیگ ن پہلے سے ہی انتشار کا شکار ہے ۔شہباز شریف اور پارٹی کے دیگر رہنماؤں کا ماننا ہے کہ نواز شریف کو اس ڈیل کو قبول کرتے ہوئے اپنی صاحبزادی مریم نواز کے ہمراہ لندن چلے جانا چاہئیے اور کچھ ماہ بعد واپس آجائیں۔ اس کے بدلے میں اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے نواز شریف کی سزا معطل کر دی جائے گی.
جبکہ

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو بھی ختم کر دیا جائے گا۔ تاہم نواز شریف نہ تو اسٹیبلشمنٹ پر بھروسہ کر رہے ہیں اور نہ ہی وطن چھوڑنے پر راضی ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف نے اسٹیبلشمنٹ کو پیغام دے دیا ہے کہ وہ وطن چھوڑ کر نہیں جائیں گے۔انہوں نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ اسٹیبلشمنٹ اور عدلیہ کے سازشی عناصر اس بات کا اعتراف کریں کہ انہوں نے نواز شریف کو سازشوں کے ذریعہ وزیراعظم ہاؤس سے نکلوایا اور 2018ء کاالیکشن بھی دھاندلی سے چرایا۔ اس حوالے سے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے بھی لندن میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف اس طرح کا کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے جو انہیں اور مریم نواز کو پاکستان سے باہر جانے اور سیاست سے علیحدہ ہونے پر مجبور کرے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسٹیبلشمنٹ قابل اعتماد نہیں ہے۔ اسحاق ڈار کے ان بیانات سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ نواز شریف اور اسٹیبلشمنٹ کے مابین اب اعتماد کا رشتہ نہیں رہا۔ نواز شریف کو ڈیل پر قائل نہ کر سکنے کے بعد اسٹیبلشمنٹ کے پاس اب محدود آپشنز موجود ہیں۔ ہو سکتا ہے کہ ان ہاؤس تبدیلی میں وزیراعظم عمران خان کو عہدے سے ہٹا کر فارورڈ بلاک بنایا جا سکتا ہے .
جبکہ دوسری جانب شہباز شریف کی قیادت میں مسلم لیگ ن پیپلز پارٹی کی مدد سے مرکز اور پنجاب میں حکومت بنا سکتے ہیں۔دوسری آپشن یہ ہے کہ اسٹیبلشمنٹ معیشت کو بچانے کے لیے واشنگٹن اور ریاض سے ڈالرز کی اُمید کرتے رہیں، لیکن یہ کوئی دیر پا حل نہیں ہے۔ اس سے معیشت میں استحکام تو آ سکتا ہے لیکن بہتری کی گنجائش نہیں ہوگی۔ جبکہ اسٹیبلشمنٹ کے پاس آخری آپشن یہی ہے کہ وہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو ڈوبنے دیں اور نئے عام انتخابات کروا دیں۔

Categories
پاکستان

وزیر اعظم عمران خاں نے شیخ رشید اور پرویز خٹک بارے حیران کن فیصلہ کر لیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) جب وفاقی کابینہ تشکیل دی گئی تھی تو وزارت داخلہ کے معاملہ پر شیخ رشید اور موجود وزیر دفاع پرویز خٹک کے مابین ٹھن گئی تھی تاہم وزیر اعظم عمران خاں نے دانشمندی کا مظاہرہ کرتے ہو ئے یہ وزارت اپنے پاس رکھی اب وزارت داخلہ بریگیڈر (ریٹائر) اعجاز شاہ کے پاس ہے.


اب میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے نیا وزیر داخلہ لگانے پر غور شروع کر دیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے نیا وزیر داخلہ مقرر کرنے پر غور شروع کر دیا ہے۔نئے وزیر داخلہ کے لیے وزیر ریلوے شیخ رشید اور وزیر دفاع پرویز خٹک کے نام زیر غور ہیں۔بتایا گیا ہے کہ اعجاز شاہ کی طبعیت نازساز ہے،ان کا روزانہ کی بنیاد پر معائنہ کیا جاتا ہے۔جس وجہ سے وزارت کے امور متاثر ہو رہے ہیں چونکہ یہ بہت اہم وزارت ہے اس وجہ سے وزیراعظم عمران خان کو اب ایک نئے وزیر داخلہ کی تلاش ہے۔پریز خٹک نے بھی وزارت داخلہ کے قلمدان پر نظریں جمائی ہوئی ہیں۔اس تمام سلسلے میںوزیراعظم عمران خان غور کر رہے۔حتمی فیصلہ بھی وزیراعظم عمران خان کریں گے۔خیال رہے رواں سال مئی میں پاکستان تحریک انصاف کے سینئر ترین رہنما اور وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ کو دل کا دورہ پڑا تھا۔نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ کو دل کی تکلیف کے باعث ہنگامی طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا۔ وزیر داخلہ اعجاز شاہ کو اے ایف آئی سی راولپنڈی منتقل کیا گیا۔ اے ایف آئی سی راولپنڈی میں وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ کا تفصیلی طبی معائنہ کیا گیا۔

طبی معائنے کے بعد ڈاکٹرز نے وزیر داخلہ کی انجیو پلاسٹی کی۔وفاقی وزیر داخلہ کے دل کی تین شریانوں کو سٹنٹ ڈال کر کھول دیا گیا۔ انجیو پلاسٹی کے بعد وزیر داخلہ اعجاز شاہ سی سی یو میں زیر علاج رہے۔ ڈاکٹروں نے وزیر داخلہ کو آرام کا مشورہ دیا تھا۔ امکان ظاہر کیا گیا تھا کہ طبیعت ناساز ہونے کے باعث وزیر داخلہ اعجاز شاہ کئی روز کیلئے سیاسی منظر نامے سے غائب رہیں گے۔ جب کہ دوسری جانب : معروف صحافی عمران خان نے وفاقی کابینہ کے اندر تبدیلیوں کا اشارہ دے دیا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ میرے پاس بھی کچھ خبریں جس کے مطابق وفاقی کابینہ میں بہت ساری تبدیلیاں ہوں گی۔ظاہر ہے اگر کابینہ میں تبدیلی کی گئی تو کئی وزراء ادھر اُدھر بھی ہو سکتے ہیں .

Categories
پاکستان

پاکستان کے پاس ایٹم بم سے بھی زیادہ خطرناک ہتھیار موجود ہےجسے استعمال کرنے کا وقت آ گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)آخری فیصلہ کر لیں ، پاکستان کے پاس ایٹم بم سے بھی زیادہ خطرناک ہتھیار موجود ہےجسے استعمال کرنے کا وقت آ گیا ۔۔ معروف صحافی و تجزیہ کار صابر شاکر نے اپنے حالیہ کالم میں وزیراعظم عمران خان کو مشورہ دے دیا ۔ تفصیلات کے مطابق صابر شاکر نے کہا کہ ہم وزیراعظم عمران خان اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل

 

قمرجاوید باجوہ سے عرض کریں گے کہ وہ اپنی سفارتکاری کو جارحانہ انداز میں آگے بڑھائیں اور مسلم حکمرانوں اور عالمی برادری کو اپنے ساتھ ملانے کے لیے بھر پور کوشش کریں۔ وزیراعظم عمران خان، جنرل قمر جاوید باجوہ، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور ریٹائرڈ سینئر پارلیمنٹیرینز پر مشتمل وفود دنیا بھر کے ممالک کے دارالحکومتوں میں جائیں اور مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے دنیا کو آگاہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ سکیورٹی کونسل کے بند کمرے کے اجلاس میں پاکستان کے خلاف کوئی آواز نہیں اُٹھائی گئی۔ اس لیے اس حمایت کو لے کر آگے بڑھنا ہوگا۔ ادھرامریکہ افغانستان میں ہر صورت کامیاب بیانیے کے ساتھ نکلنا چاہتا ہے اور پاکستان افغانستان کے معاملے سے ایک معقول فائدہ حاصل کر سکتا ہے۔ پاکستان کی سول و عسکری قیادت میری دانست میں ایک مؤثر ڈیل کر سکتی ہے۔ پاکستان کو اپنی روایتی سوچ بدل کر بدلتے ہوئے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے صرف اور صرف اپنے قومی مفادات کو سامنے رکھتے ہوئے بات کرنی چاہئیے۔ صابر شاکر کا کہنا تھا کہ افغانستان اور یہ خطہ امریکہ کے لیے بہت اہم ہے اور پاکستان اس خطے اور افغانستان کے مسئلے کا اہم کھلاڑی ہے۔ بند کمرے اور بیک ڈور ڈپلومیسی کے ذریعے بہت کچھ ہو سکتا ہے۔ دشمن کے دشمنوں سے دوستی اور دوست کے دشمنوں سے دشمنی ہر جگہ ملتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آؤٹ آف دی باکس ، کثیر الجہتی اورخفیہ سفارتکاری کے ذریعے اپنے کارڈ استعمال کریں تو بڑے سے بڑا اور مشکل سے مشکل ہدف بھی حاصل ہو سکتا ہے۔ ایٹم بم سے بھی زیادہ خطرناک ہتھیار منظم جدوجہد ہے۔ اگر یہ جدو جہد ریاست ِپاکستان استعمال کرے تو اس سے ناقابلِ یقین حد تک مثبت نتائج حاصل ہوں گے۔

Categories
پاکستان

سابق وزیراعظم نواز شریف کے معاون خصوصی عرفان صدیقی گرفتار

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) سابق وزیراعظم نواز شریف کے سابق معاون خصوصی عرفان صدیقی کو کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے پر گرفتار کر لیا گیا۔ پولیس ذرائع کے مطابق رات گئے عرفان صدیقی کو کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے پر گرفتار کر کے اسلام آباد کے تھانہ رمنا منتقل کردیا گیا ہے ۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ عرفان صدیقی نے گھر کرائے پر دے رکھا تھا،انہوں نے کرایہ داری پر عمل درآمد نہ کیا اور نہ ہی پولیس اسٹیشن میں اس کا اندراج کروایا۔اس کے علاوہ عرفان صدیقی کے ساتھ اقبال نامی شخص کو بھی حراست میں لیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق عرفان صدیقی کو گرفتار کر کے سیکشن 188 کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ مذکورہ سیکشن قابل ضمانت ہے تاہم اس کی ضمانت عمومی طور پر اسسٹنٹ کمشنر ہی لیتا ہے ۔

Categories
اہم خبریں پاکستان

شیخ رشید کی وصیت منظر عام پر، تمام جائیداد کس کے نام کردی؟ حیرت انگیز انکشاف‎

راولپنڈی (قدرت روزنامہ)ریلوے روڈ پر گورنمنٹ کالج برائے خواتین کے سنگ بنیاد کے موقع پر وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ میرے پاس الفاط نہیں کہ وزیر اعلی کا شکریہ ادا کروں، انہوں نے کہاکہ میری یہ خواہش تھی کہ پنجاب کا وزیر اعلیٰ ستر سالہ تاریخ میں ٹرین پر آیا،اس کالج نے چودہ سال لگے بہت تھکایا اس نے.انہوں نے کہاکہ میں نے ہائی کورٹ سے اس کیس کو جیتا.

انہوں نے کہاکہ جب کالج شروع کیا تو بتایا گیا یہاں دس دس کروڑ روپے کی دکان ہے. انہوں نے کہاکہ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار عمران خان کا انتخاب ہے.انہوں نے کہاکہ ہم نرسنگ ہسپتال بھی عامر کیانی کے حلقے میں بنانے جا رہے ہیں. انہوں نے کہاکہ ہم نے سات تعلیمی ادارے بنائے ہیں،انہوں نے کہاکہ ساری زندگی وزیر اعلی پنجاب کے مشکور رہیں گے. انہوں نے کہاکہ اپنی ساری جائیداد ان یونیورسٹیوں کے نام کرتے ہیں.انہوں نے کہاکہ وزیر اعلیٰ صاحب جب ہم نے پہلی خواتین یونیورسٹی بنائی اس وقت فنانس منسٹر نے کہا ہمارے پاس فنڈ نہیں.انہوں نے کہاکہ اس یونیورسٹی میں جہلم اور اٹک سے بیٹیاں پڑھنے آتی ہیں، انہوں نے کہاکہ جس فاطمہ جناح یونیورسٹی کیلئے عوام میرا مزاق اڑاتے تھے آج انہی کے بچے یہاں زیر تعلیم ہیں.انہوں نے کہاکہ انگریز جہاں سے مزدور لیتا تھا وہاں ہم نے کالج کھولے.انہوں نے کہاکہ رکشہ ڈرائیور، ڈینٹر، پینٹر اور سب کی بچیاں ٹاپ کر رہی ہیں. انہوں نے کہاکہ ڈھوک دلال میں بھی دو منزلہ کالج بنائینگے.انہوں نے کہاکہ سخت تنگ حالات میں بھی عمران خان نے ایک ارب روپیہ ہسپتال کیلئے دیا . شیخ رشید نے کہاکہ ایم ایل ون پر دستخط کرنے جارہے ہیں اگر ہو گئے تو ڈیڑھ لاکھ لوگوں کو روزگار دونگا.انہوں نے کہاکہ چار ماہ میں چار بلین کا نفع اکھٹا کیا ہے،چوبیس ٹرینیں چلائی گئی ہیں.انہوں نے کہاکہ میری زندگی کی کوشش ہے چوروں ڈاکوؤں اور لٹیروں سے جان چھوٹ جائے،انہوں نے کہاکہ کیانی صاحب ہمارے ریلوے کے مزدور کو ہیلتھ کارڈز دے دیں. انہوں نے کہاکہ کل ریلوے کا مزدور یہ نہ کہے کہ میں نے کوئی بددیانتی کی، انہوں نے کہاکہ چیف آف آرمی سٹاف سے چار اجلاس کئے عمران خان سے بھی کیا.انہوں نے کہاکہ 23 کلومیٹر سواں سے اسلام آباد تک لئی ایکسپریس وے بنانے جا رہے ہیں ،شاپنگ مال بنائینگے، آپ کو ٹیکس بھی دینا ہو گا.انہوں نے کہاکہ آپکا مشکور ہوں، زندگی میں کبھی ڈی سی یا کمشنر کے پاس نہیں گیا. انہوں نے کہاکہ ہمیں نہیں معلوم کہ پٹواری کسکو کہتے ہیں انہوں نے کہاکہ ہم تعلیم کو عام کرنا چاہتے ہیں،انہوں نے کہاکہ جس دن نالہ لئی اور ایم ایل ون بن گیا تو قوم عمران خان کو ووٹ دیگی،عمران خان کو ریل بھی ووٹ دلائیگی.

Categories
اہم خبریں پاکستان

مولانا فضل الرحمان کو ہسپتال سے گھر منتقل کر دیا گیا

اسلام آباد متحدہ مجلس عمل اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو ہسپتال سے گھر منتقل کر دیا گیا ہے.مولانا فضل الرحمان کو طبیعت ناساز ہونے پر گزشتہ روز نجی ہسپتال منتقل کیا گیاتھا، انہیں سینے میں تکلیف کے ساتھ قے کی شکایت تھی.

ہسپتال میں داخل ہونے کے بعد مولانا فضل الرحمان نے بتایا تھا کہ زیادہ کھانا کھانے کے باعث ان کے معدے میں تکلیف ہوئی جس کے بعد انہیں چکر آنا شروع ہوئے.جمعیت علمائے اسلام (ف) کے ترجمان کے مطابق مولانا فضل الرحمان کی طبیعت اب پہلے سے بہت بہتر ہے، انہیں رات گئے ہسپتال سے گھر منتقل کر دیا گیا ہے، ڈاکٹروں نے انہیں آرام کا مشورہ دیا ہے.

Categories
اہم خبریں پاکستان

بھارت کی دھمکیاں :پاکستان آئے ترک فضائیہ کے کمانڈر جنرل نے پاکستانیوں کیلئے سب سے شاندار اعلان کر دیا

اسلام آباد (قدرت روزنامہ)بھارت کی دھمکیاں :پاکستان آئے ترک فضائیہ کے کمانڈر جنرل نے پاکستانیوں کیلئے سب سے شاندار اعلان کر دیا ، کیاہونےو الا ہے ؟ ہندوستان پر سکتہ طاری ..

ترک فضائیہ کے کمانڈر جنرل حسن نے شاندار عہد کرتے ہوئے کہا کہ ہم اچھے اور برے دونوں حالات میں پاکستان کا ساتھ دیں گے . ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق ترک فضائیہ کے کمانڈر جنرل حسن نے یہ بات دراصل رسالپور میں اصغر خان اکیڈمی میں پاک فضائیہ کی ہونے والی پاسنگ آوٹ پریڈ سے خطاب کے دوران کہی .

انہوں نے کہا پاکستان اورترکی کے تعلقات کی جڑیں بہت گہری ہیںاور یہ کئی دہائیوں پر مشتمل ہیں . انہوں نے پاک فضائیہ کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ مشرقی سرحد سے ہونے والی جارحیت کا پاک فضائیہ نے کامیابی کے ساتھ ناکام بنایا . ترک کمانڈر کا کہناتھا کہ پاک فضائیہ نے آپریشنل صلاحیتوں کو بڑھا کر دنیا کی جدید ایئر فورسز میں سے ایک ہونے کا سٹیٹس اور وقار کی بلندیوںحاصل کر لی ہیں .انہوں نے کہا کہ ترک قوم پاکستان کی قربانیوں کو بے حد قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے.پاوسنگ آوٹ پریڈ کے دوران ترک جنرل نے شاندار کارکردگی دکھانے والے نوجوانوں میں میڈیلز اور ٹرافیز تقسیم کیں .


Categories
اہم خبریں پاکستان

شریف خاندان کے اثاثوں میں اضافے کے ذریعے سے متعلق اہم انکشاف

اسلام آباد (قدرت روزنامہ) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئیر سیاستدان محمد علی درانی نے شریف خاندان کے اثاثوں میں اضافے کے اہم راز سے پردہ اُٹھا دیا. محمد علی درانی کا کہنا تھا کہ ٹیکنالوجی صرف زرداری صاحب نے نہیں بلکہ شریف خاندان نے بھی استعمال کی.

یہ ٹیکنالوجی شریف خاندان کی ہی ایجاد ہے جس کے خالق اسحاق ڈار ہیں. انہوں نے کہا کہ حدیبیہ سے یہ ٹیکنالوجی ایجاد ہوئی اور 1992ء کا جو فارن کرنسی پروٹیکشن ایکٹ لایا گیا وہ اس سارے کالے دھن کے تحفظ کا ذریعہ بنا. اسی کی وجہ سے آج پاکستان ایف اے ٹی ایف میں پھنسا ہوا ہے. انہی لوگوں کی منی لانڈرنگ کی وجہ سے پاکستان کو آج ان مسائل کا سامنا ہے. پروگرام میں بتایا گیا کہ زرداری صاحب کے اکاؤنٹس تو یہیں پاکستان میں ہیں لیکن شریف خاندان کے اکاؤنٹس متحدہ عرب امارات اور کینیڈا میں ہیں.  متحدہ عرب امارات میں ایک مزدور ہے جس کے اکاؤنٹ سے 55 لاکھ ڈالر سلمان شہباز کے اکاؤنٹ میں آیا. حالانکہ وہ وہاں پر ایک مزدور کی حیثیت سے کام کرتا ہے. کچھ تفصیلات کے مطابق اس مزدورکا نام رمیز شاہد ہے. اصل میں یہ بھی منی لانڈرنگ کے زمرے میں آتی ہے. اسی طرح منظور احمد نامی ایک شخص جو کاغذ کا کام کرتے ہیں ان کے اکاؤنٹ سے ایک لاکھ 75 ہزار ڈالر آئے. 2003ء میں شہباز شریف خاندان کے اثاثوں کی مالیت 20 ہزار سات سو روپے تھی جو 2017ء میں 300 بلین کی ہو گئی ہے. جس کا مطلب ہے کہ ان کے اثاثوں میں 15 سو فیصد اضافہ ہوا ہے. محمد علی درانی نے کہا کہ جو معیشت ان کے گھر سے نہ چلے اور ان کے گھر نہ آئے وہ جمہوریت کے لیے خطرہ ہے. شریف خاندان کے اثاثوں میں اضافے سے متعلق سینئیر سیاستدان محمد علی درانی نے مزید کیا کہا آپ بھی ملاحظہ کیجئیے: